Shehzad Aslam

    Follow

General Blog

ساگ

ساگ 
۔
جو قوم ایک پورا دن ساگ پکانے پر ضائع کردیتی ہے وہ انسانیت کیلئے نقصان دہ ہوسکتی ہے یہ کہہ کر سکندراعظم نے پنجاب پر چڑھائی کردی۔

محمود غزنوی کو بتایا گیا کہ دنیا میں ایک ایسا خطہ بھی ہے جو ساگ کو انسانوں کی خوراک کہتے ہیں یوں سترہ حملے وجود میں آئے۔

غوری سے لیکر ابدالی تک کے لشکر کے جانورں کا ساگ اسی خطے سے جاتا تھا۔

مجھے یقین ہے ایک دن ہم اس ملک پر قابض ہوجائیں گے کیونکہ یہ ساگ خور قوم ہے۔ ایسٹ انڈیا کمپنی کا پہلا تاجر

جو قوم ساگ کھاتی ہو وہاں تعلیم کچھ نہیں کرسکتی۔ لارڈ میکالے۔

ہمارے اور تمھارے درمیان اب ساگ فیصلہ کرے گا۔ نیوٹن

میری بڑی خواہش تھی پنجاب کے لوگ بھی نوبل انعام جیتیں مگر وہ ساگ کھانا نہیں چھوڑ سکتے۔ الفریڈ نوبل

نیپال پر آج تک کوئی حملہ آور فتح حاصل نہیں کرسکا کیونکہ وہ ساگ نہیں کھاتے۔ نپولین

میری قوم اگر ساگ کھانا چھوڑ دے تو کھویا ہوا مقام دوبارہ حاصل کرسکتی ہے۔ سرسید احمد خان

کولمبس کو راستے میں ہی پتہ چل گیا تھا برصغیر میں ساگ کھایا جاتا ہے اس لئے وہ راستہ بدل کر امریکہ نکل گیا۔

ایک بار عرب کے جانوروں کا ساگ کم پڑگیا تو معلوم ہوا جہاں سے آتا تھا وہاں کے لوگوں نے خود کھانا شروع کردیا ہے اور پھر ان کی سرکوبی کیلئے حجاج نے محمد بن قاسم کو بھیجا۔

ایک منگول کو جب بغداد میں ساگ کھانے کو دیا گیا تو اس نے واپس جاکر چنگیز خان کو شکایت کردی اور پھر چنگیز خان قہر بن کر ٹوٹ پڑا۔

 اسکے ایک تاجر نے بتایا کہ دنیا بھر کا ساگ پنجاب سے آتا ہے تو چنگیز خان نے اپنی فوجوں کو پنجاب پر حملہ کا حکم دے دیا😄

ساگ کے خلاف کی گئی اس طرح کی تمام حاسدانہ پوسٹ ہماری ساگ سے دیوانگی کو کم نہیں کر سکتیں ہیپی ساگ سیزن۔

پکاؤ تے رج رج کھاؤ🤩

Comments

sadaf iqbal

دلچسپ

arshad muneem

Khoob